اہم خبریں سائنس اور ٹیکنالوجی

ایلون مسک کے ناقد صحافیوں کے ٹوئٹر اکاؤنٹس بند، ٹویٹس غائب ہونے لگیں

دسمبر 16, 2022 < 1 min

ایلون مسک کے ناقد صحافیوں کے ٹوئٹر اکاؤنٹس بند، ٹویٹس غائب ہونے لگیں

Reading Time: < 1 minutes

دنیا میں سماجی رابطوں کی بڑی ویب سائٹ ٹوئٹر نے کمپنی کے ارب پتی مالک ایلون مسک پر رپورٹ کرنے والے صحافیوں کے اکاؤنٹ معطل کر دیے ہیں۔

ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق ان صحافیوں میں امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز، واشنگٹن پوسٹ، ٹیلی ویژن چینل سی این این اور دیگر میڈیا گروپس سے وابستہ رپورٹر شامل ہیں۔

ٹوئٹر انتظامیہ نے فی الحال یہ واضح نہیں کیا کہ ان صحافیوں کا اکاؤنٹ کیوں معطل کیا گیا اور ان کی پروفائل اور پرانی ٹویٹس اچانک کیوں غائب ہو گئیں۔

قبل ازیں ٹوئٹر نے ایلون مسک کے ذاتی طیارے کی نقل و حرکت پر نظر رکھنے والے اکاؤنٹ کو مستقل طور پر معطل کر دیا تھا جس کے بعد اب مخصوص صحافیوں کے اکاؤنٹس بند کیے گئے ہیں۔

ٹوئٹر نے نئی پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ کسی بھی شخص کی اجازت کے بغیر اس کی ریئل ٹائم لوکیشن شیئر کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔

جن صحافیوں کے اکاؤنٹس معطل ہوئے ہیں ان میں سے اکثریت ان کی ہے جنہوں نے ٹوئٹر کی نئی پالیسی اور ایلون مسک کے فیصلے پر تبصرے کیے۔

مسک نے اپنی پچھلی ٹویٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’ڈوکسنگ‘ کا اصول سب کی طرح صحافیوں پر بھی لاگو ہوتا ہے۔

ڈوکسنگ سے مراد کسی بھی فرد کی شناخت، اس کا پتا یا دیگر ذاتی معلومات آن لائن پلیٹ فارمز پر شیئر کرنا ہے۔

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے